دو سعودی خواتین نے میڈیکل سائنس کی دنیا میں نئی ایجادات کر دیں

عودی عرب کی دو ماہر خواتین نے دل کے امراض اور بصارت سے متعلقہ سائنس کی دنیا میں نئی ایجادات کرکے اپنی صلاحیتوں کا لوہا منوا لیا ہے.  سعودی خواتین میڈیکل سائنس اور تحقیق کے شعبے میں عالمی پذیرائی حاصل کر رہی ہیں، اسی تناظر میں دو سعودی خواتین نے حال ہی میں ’’لاریل یونیسکو‘‘سے ایوارڈ حاصل کئے ہیں. 

27 سالہ سعودی خاتون اسرار دمدم کو پی ایچ ڈی سٹوڈنٹس کیٹگری میں اعزاز کی حقدار قرار دیا گیا  ہے، اسرار نے دل کے لئے ایک خاص قسم کا آلہ  بنانے میں کردار ادا کیا  ہے. 

یہ آلہ صحت مند دل کی حرکات کو منظم کرنے کے طریق کار میں انقلاب کے مترادف ہے، اس کے لئے ادویہ، الیکٹریکل انجینیئرنگ اور الیکٹرو فزکس کو باہم مربوط کیا گیا ہے۔

جبکہ دوسری سعودی خاتون لامہ العبدی ہیں جنہیں لاریل یونیسکو پروگرام کے پوسٹ ڈاکٹر ریسرچرز کیٹگری میں کرومیٹن پر ان کی تحقیق کے ساتھ بصارت سے محرومی سے متعلق جینز کو کنٹرول کرنے کے حوالے سے ریسرچ کے اعتراف میں اعزاز دیا گیا ہے۔ 

کرومیٹن ایک مادہ ہے جو کروموسوم میں پایاجاتا ہے جو  وراثتی مادے ’’ڈی این اے‘‘ اور پروٹین یعنی لحمیات پر مشتمل ہوتے ہیں۔