اسامہ ستی قتل کیس،جوڈیشل انکوائری رپورٹ میں اہم پولیس افسران کو عہدے سے ہٹانے کا حکم

اسامہ ستی قتل کیس کی جوڈیشل انکوائری رپورٹ  میں غفلت اور لاپرواہی کا مرتکب پائے جانے والے دو سپرٹنڈنٹس پولیس (ایس پیز)سمیت چھ افسران کو عہدے سے ہٹانے حکم دیا ہے۔

جیو نیوز کے مطابق جوڈیشل انکوائری رپورٹ میں ایس پی اینٹی ٹیرارزم سکواڈ(اے ٹی ایس )اورنائٹ ڈیوٹی پرموجود  ایس پی انویسٹی گیشن کو عہدے سےہٹانےکا حکم دیا ہے۔رپورٹ میں ڈپٹی سپرٹنڈنٹ آف پولیس (ڈی ایس پی )نائٹ ڈیوٹی،سٹیشن ہاوس آفیسر(ایس ایچ او) تھانارمنا ، ایس ایچ او کراچی کمپنی اوراسسٹنٹ سب انسپکٹر (اے ایس آئی) نائٹ ڈیوٹی تھانارمنا کو بھی عہدے سےہٹانے کا حکم دیا گیا ہے۔

جوڈیشل انکوائری رپورٹ میں  اے ٹی ایس اور پولیس آپریشنل ٹیموں کیلیےذہنی تربیت کرانےاور کالے شیشے والی گاڑیوں کےخلاف فوری کارروائی کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔رپورٹ میں کالے شیشے والی گاڑیوں کو جاری  تمام پرمٹ  منسوخ کرنےکی ہدایت بھی کی گئی ہے۔