14 سال میں ہزار ہ برادری کے 2ہزار سے زائد لوگ دہشت گردی کا نشانہ بن چکے: احسن اقبال

پاکستان مسلم لیگ (ن) کے رہنما احسن اقبال نے کہا ہے کہ ہزارہ برادری کے قتل کا کوئی پہلا واقعہ نہیں،14 سال میں ہزارہ برادری کے  2 ہزار سےزائد لوگ دہشت گردی کا نشانہ بن چکےہیں۔

کراچی میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انکا کہنا تھا کہ  ہمارے دور میں بھی ایسا واقعہ پیش آیا تھا،اسوقت میں اور آرمی چیف وہاں گئے۔کیا عمران خان کی سکیورٹی چیف آف آرمی سٹاف سے زیادہ ہے؟کیا چیز عمران خان کو روکے ہوئے ہے؟اگر تب آرمی چیف جاسکتے تھے تو اب عمران خان کیوں نہیں جاسکتے؟احسن اقبال کا کہنا تھا کہ حکومت میں احساس نام کی کوئی چیز نہیں ہے،ہزارہ برادری کے تمام مطالبات مانے جانے چاہیے،عمران کو پہلے ہی دن وہاں جاکر ورثا سے اظہار ہمدردی کرنا چاہیے تھا۔