کانگریس پر ٹرمپ کے حمایتوں کا حملہ ، امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے ساتھ کیا کرنے کا سوچا جا رہاہے ؟ امریکہ سے تہلکہ خیز خبر آ گئی

غیر ملکی خبر رساں ادارے ” رائٹرز “ نے دعویٰ کیاہے کہ کابینہ ممبران اور ٹرمپ کے اتحادیوں کے مابین 25 ویں ترمیم کو لاگو کرنے پر مشاورت کا آغاز کر دیا گیاہے ، 25 ویں ترمیم کے ذریعے کابینہ کی اکثریت ٹرمپ کو فرائض کی انجام دہی سے معذول کر سکتی ہے اور نائب صدر مائیک پینس کو قائم مقام صدر بنا دیا جائے گا ۔

تفصیلات کے مطابق امریکی صدر ٹرمپ کے حمایتوں نے کانگریس پر اس وقت حملہ کر دیا جب جوبائیڈن کی جیت کی توثیق کیلئے مائیک پینس کی زیر صدارت مشترکہ اجلاس جاری تھا جس کے باعث اجلاس کو روکنا پڑا تاہم تین سے چار گھنٹوں کی اس جنگ کے بعد اجلاس دوبارہ شروع کر دیا گیاہے جس میں الیکٹورل ووٹس کی توثیق جاری ہے ۔

کیپٹل ہل میں پیدا ہونے والی صورتحال کے پیش نظر ٹرمپ کی کابینہ نے انہیں اختیارات سے معذول کرنے سے متعلق سو چ بچار شروع کر دیا ہے ۔ سی بی ایس اور سی این این نے اپنے ذرائع کے حوالے سے کہاہے کہ ابھی یہ واضح نہیں ہو سکا ہے کہ کابینہ میں صدر کو برطرف کرنے کیلئے درکار اکثریت حاصل ہو گئی ہے یا نہیں ۔

فوربز کے مطابق 25 ویں ترمیم کے سیکشن 4 کے تحت اگر نائب صدر اور کابینہ کی اکثریت اس بات پر اتفاق کر لیتے ہیں کہ امریکی صدر ” آفس کے اختیارات اور فرائض انجام دینے سے قاصر ہیں “ تو نائب صدر فوری طور پر قائم مقام صدر کا عہدہ سنبھال لیں گے ۔