عدالت نے ڈاکٹر شہبازگل کو16 جنوری کو طلب کر لیا

 لاہور کی مقامی عدالت نے ہتک عزت  کیس میں وزیراعظم کے ترجمان ڈاکٹر شہباز گل کو فرد جرم کی کاررائی کےلیے16جنوری کو طلب کرلیا۔ ٹورازم کمپنی کی جانب سے دائر ہتک عزت دعوی پر ایڈیشنل سیشن جج ذوالفقار علی نے سماعت کی،جس پر وزیراعظم کے ترجمان ڈاکٹر شہبازگل عدالت میں پیش ہوئے۔

نجی ٹی وی ابتک نیوز کے مطابق سماعت کے دوران درخواست گزار کمپنی کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ البراک گروپ نے پاکستان کی تاریخ میں پہلی بار 18 میٹر لمبی میٹرو بس متعارف کروائی، ڈاکٹر شہباز گل نے نجی ٹی وی کے پروگرام میں کمپنی کےخلاف بیان بازی کی۔

شہباز گل نے درخواست گزار کمپنی پر ثبوتوں کے بغیر کرپشن کا الزام لگایا ہے،شہباز گل کے میڈیا اور سوشل میڈیا بیانات کے سبب کمپنی کو ملین ڈالرز کا نقصان ہوا ہے،شہباز گل کےخلاف تعزیرات پاکستان کی دفعہ 499 اور 500 کے تحت ہتک عزت کی کارروائی کی جائے۔

عدالت نے آئندہ سماعت پرفرد جرم کی کارروائی کے لیے ڈاکٹر شہبازگل کو طلب کرتے ہوئے بطور ثبوت ویڈیو بھی فراہم کرنے کا حکم دے دیا۔ ڈاکٹر شہبازگل کی عدالت میں آمد کے موقع پر لیگی کارکنان نے حکومت مخالف نعرے لگائے جبکہ کارکنان کی جانب سے آٹا چور اور چینی چور کے نعرے بھی لگائے گئے۔