” کل کو اور لوگ شہید ہو گئے تو وہ بھی اپنے مطالبات منوانے چاہیں گے “ وزیراعظم کے مشیر زلفی بخافی کی کوئٹہ میں مظاہرین سے گفتگو لیک ہو گئی

وفاقی وزیر علی زیدی اور زلفی بخاری بھی دھرنے کے شرکا سے مذاکرات کے بعد ناکام لوٹ گئے اور شرکا نے وزیراعظم کی آمد تک دھرنا جاری رکھنے کا اعلان کیا ہے تاہم اس موقع پر زلفی بخاری کی مظاہرین کے ساتھ کی جانے والی گفتگو کی ویڈیو لیک ہو گئی ہے ۔

تفصیلات کے مطابق سانحہ مچھ کے خلاف کوئٹہ میں بھی مظاہرین کا دھرناچوتھے روز میں داخل ہو گیاہے اور انہوں نے عمران خان کی آمد تک دھرنا ختم کرنے سے انکار کر دیاہے ، وزیراعظم کی ہدایت پر زلفی بخاری اور وفاقی وزیر علی زیدی مذاکرات کیلئے پہنچے لیکن وہ ناکام ہو گئے تاہم اس موقع پر مظاہرین سے ہونے والی ان کی گفتگو لیک ہو گئی ہے جس کی ویڈیو سوشل میڈیا پرتیزی سے وائرل ہو رہی ہے ۔

ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ مظاہرین زلفی بخاری سے مطالبہ کر رہے ہیں کہ کم از کم وزیراعظم آجائیں تو شہداءکے لواحقین کو تسکین ملے گی ، زلفی بخاری جواب دیتے ہیں کہ ہم وزیراعظم کو بالکل لائیں گے اور جلد لائیں گے ، مظاہرین کے نمائندہ نے کہا کہ تمام لواحقین یہاں سٹیج پر عمران خان سے ملنا چاہتے ہیں ۔ اس پر زلفی بخاری نے کہا کہ کل خوانخواستہ پاکستان میں کہیں اور کچھ ہو جائے اور کوئی شہید ہو جائے تو وہ بھی اپنے مطالبات منوانا چاہیں گے اور اس طرح بات صرف یہاں نہیں رکے گی ۔

رہنما ایم ڈبلیو ایم آغارضا کا کہنا تھا کہ ایک طرف پی ڈی ایم استعفی مانگ رہی ہے لیکن ہم عمران خان کواپنا سربراہ مان کربلا رہے ہیں، ہمارے پاس آکر ان کی عزت میں مزید اضافہ ہوگا۔زلفی بخاری اور وفاقی وزیر علی زیدی مذاکرات کرنے میں ناکام رہے اور خالی واپس ہی لوٹ آئے ہیں ،اس موقع پر وفاقی وزیرعلی زیدی کا کہنا تھاکہ پاکستان کو نقصان پہنچانے میں بیرونی ہاتھ بھی ملوث ہے۔