پنجاب میں سال 2020کے دوران آتشزدگی کے 15ہزار سے زائد واقعات رونما ہوئے،ریسکیو نے رپورٹ جاری کردی

ریسکیو1122 فائرسروس نے سال 2020میں آتشزدگی کے  15ہزار590 حادثات پر ریسکیو سروس فراہم کی۔

 ڈائریکٹر جنرل پنجاب ایمرجنسی سروس (ریسکیو1122)ڈاکٹر رضوان نصیر نے کہا ریسکیو 1122نے بروقت ریسپانس اور پیشہ وارانہ فائر فائٹنگ کرتے ہوئے 58ارب روپے کی ما لیت کے ممکنہ نقصانات کو بچایا،فائر ریسکیو سروس روزانہ اوسط 43آگ کے حادثات میں ریسپانس فراہم کرتی ہے،آگ لگنے کی بڑی وجوہات میں شارٹ سرکٹ اور لا پرواہی شامل ہیں۔ 

انہوں نے کہا کہ ان حادثات کی روک تھام کے لیے ضروری ہے کہ فائر سیفٹی 2016کے قوانین کو لاگو کیا  جا ئے۔2020میں آتشزدگی کے 15590حادثات میں 79لوگ جاں بحق ہوئے ۔سال 2020میں سال 2019کے مقابلے میں آگ کے حادثات میں 2789حادثات کی کمی واقع ہوئی ہے،سال 2020میں شارٹ سرکٹ کی وجہ سے7348 حادثات ہوئے 1009واقعات گیس لیکج،3201واقعات کی وجہ لاپرواہی وسگر یٹ نوشی،41موم بتی کی وجہ سے، 103 ایل پی جی سلنڈرحادثات،139کچن کی آگ،136جنگلات کی آگ،1129نامعلوم وجوہات اور2484آتشزدگی کے واقعات دیگروجوہات کی بناپروقوع  پذیرہوئے۔  اعدادو شمار کے مطابق آگ کے زیادہ تر حادثات بڑے شہروں میں ہوئے جن میں 3460لاہور، 1531فیصل آباد،1115راولپنڈی اور914ملتان میں رونما ہوئے