اسامہ قتل کیس : لگتا ہے تم لوگ ملے ہوئے ہو،اے ٹی سی جج پولیس پر برہم، ملزمان کا 7 روزہ جسمانی ریمانڈ منظور

اے ٹی سی اسلام آباد نے اسامہ قتل کیس کے ملزمان کا 7 روزہ جسمانی ریمانڈ منظور کرلیا، اے ٹی سی جج نے پولیس پر برہمی کااظہار کرتے ہوئے استفسار کیاگاڑی کی تصویر لی گئی ہیں، کہاں ہیں وہ تصاویر جس میں سیٹ پر گولی لگی ؟ لگتا ہے تم لوگ ملے ہوئے ہو۔

انسداد دہشتگردی عدالت میں اسامہ قتل کیس کی سماعت ہوئی،5 گرفتار ملزمان کو عدالت میں پیش کردیاگیا،اے ٹی سی جج نے پولیس سے استفسار کیاکہ کون کون سے ملزمان ہیں ؟، پولیس نے جواب دیتے ہوئے کہاکہ پانچ ملزمان ہیں، سب پیش ہو گئے ہیں، جج نے استفسار کیا کہ کیا ملزمان سے اسلحہ برآمد ہو گیا ہے؟ ، پولس نے جواب دیتے ہوئے کہاکہ ملزمان سے اسلحہ اور خول برآمد ہو گئے ہیں۔

 اے ٹی سی جج نے پولیس پر برہمی کااظہار کرتے ہوئے استفسار کیاگاڑی کی تصویر لی گئی ہیں، کہاں ہیں وہ تصاویر جس میں سیٹ پر گولی لگی ؟ ،جج نے پولیس سے مکالمہ کرتے ہوئے کہاکہ لگتا ہے تم لوگ ملے ہوئے ہو،جج نے پولیس سے مکالمہ کرتے ہوئے کہاکہ کیا بچے کوپیچھے سے گولیاں لگی ہیں؟۔

پولیس نے عدالت کو جواب دیتے ہوئے کہاکہ بچے کو پیچھے سے گولیاں لگیں، اے ٹی سی جج نے استفسارکیاکہ بچے کو کتنی گولیاں لگیں؟ ،پولیس نے جواب دیتے ہوئے کہاکہ بچے کو 5 گولیاں پیچھے سے لگیں،وکیل نے کہاکہ چیزوں کو ٹیمپرڈ کرنے کی کوشش نہ کی جائے ،عدالت نے کہاکہ مجھے تصویر دکھائیں،بغیر سیٹ سے نکلے گولی نہیں لگ سکتی،جس سیٹ سے نکل کر5گولیاں لگیں وہ تصویر دکھائیں، پولیس نے جواب دیتے ہوئے کہاکہ وہ تصویر نہیں ہے،عدالت نے پولیس پر برہمی کااظہار کرتے ہوئے کہاکہ کیا مطلب تصویر لی ہی نہیں گئی ؟۔اے ٹی سی اسلام آباد نے اسامہ قتل کیس کے ملزمان کا 7 روزہ جسمانی ریمانڈ منظور کرلیا۔