قومی ٹیم ڈراپ کیچز کے ریکارڈ بنانے لگی، نیوزی لینڈ کیخلاف سیریز میں اب تک کتنے کیچز چھوڑے؟

 نیوزی لینڈ کیخلاف سیریز میں پاکستانی ٹیم ڈراپ کیچز کے ریکارڈ بنانے لگی جبکہ ابھی تک سات بار باؤلرز کو فیلڈرز کی غفلت کے سبب وکٹ سے محروم رہنا پڑا ہے۔

تفصیلات کے مطابق نیوزی لینڈ کیخلاف ٹیسٹ سیریز میں پاکستان نے کیچز ڈراپ کرنے کے ساتھ رن آﺅٹس چانسزبھی ضائع کئے، فیلڈ میں کئی اضافی رنز بھی دئیے جس کی وجہ سے کیویز کو میچ پر گرفت مضبوط بنانے کا موقع ملتا رہا۔ 

گزشتہ روز بھی یہی صورتحال دیکھنے میں آئی، مہمان ٹیم نے ابھی تک سات یقینی کیچز ڈراپ کئے ہیں اور مشکل مواقع اس کے علاوہ ہیں، 2011ءکے بعد کسی دو ٹیسٹ میچز کی سیریز میں یہ سب سے بڑی تعداد ہے جس میں اضافے کا خدشہ بھی موجود ہے، اس سال پاکستان نے نیوزی لینڈ سے میچز میں 12، ویسٹ انڈیز کے مقابل10اور بنگلہ دیش سے سیریز میں نو کیچ ڈراپ کر دئیے تھے۔

گرین کیپس نے اب تک سیریز میں 19نوبالز کی ہیں، ان میں سے 16نسیم شاہ نے کیں اور اس خامی نے باﺅلنگ کوچ وقار یونس کی افادیت پر سوالیہ نشان لگا دیا جو دوسرے ٹیسٹ سے قبل پاکستان چلے گئے تھے۔ دوسری جانب کین ولیم سن اور ہینری نکولس نے ٹیسٹ کرکٹ میں پاکستان کیخلاف دوسری بڑی شراکت قائم کر دی، دونوں نے کرائسٹ چرچ ٹیسٹ کے دوسرے روز 215 رنز جوڑے اور ناقابل شکست رہے۔

اس سے قبل برینڈن میکالم اور کین ولیم سن نے نومبر 2014ءمیں شارجہ میں 297رنز بنائے تھے،یہ چوتھی وکٹ کیلئے پاکستان کیخلاف سب سے بڑی پارٹنرشپ بھی ہے، سٹیفن فلیمنگ اور میکملن نے مارچ 2001 کے ہیملٹن ٹیسٹ میں 147رنز بنائے تھے۔