ڈپٹی چئیرمین سینیٹ ایک بار پھر نیب پر برس پڑے،کھری کھری سنادیں

ڈپٹی چیئرمین سینیٹ سلیم مانڈوی والا نے کہا  ہے کہ نیب کو لگام دینا پڑے گی، یہ کیسا ڈر ہے کہ نیب کی تفتیش نہیں ہونی چاہئے، ملک چلانا ہے تو پرائیویٹ ٹرانزیکشنز کو نیب سے نکالنا ہوگا۔

سینیٹ میں اظہار خیال کرتے ہوئے سلیم مانڈوی والا نے  کہا کہ ڈیڑھ سال قبل چیئرمین سینیٹ کو خط لکھا جس میں کہا کہ سینیٹرز کو بلانے سے پہلے ہم سے رجوع کریں۔اسلم مسعود، اعجاز میمن، راجہ عاصم، بریگیڈیئر ریٹائرڈ اسد منیر، قیصر عباس، عبدالقوی خان نیب کی حراست میں مرے ہیں، خرم ہمایوں نے خود کشی کرلی، نیب  لوگوں کو اس جگہ پہنچا رہا ہے، جہاں وہ خودکشی کرلیں، یہ  سنجیدہ مسئلہ ہے۔

ڈپٹی چیئرمین سینیٹ نے کہا کہ میں سیاست نہیں کررہا، اس ایوان کو اس معاملے کو سنجیدگی سے دیکھنا چاہئے۔ اگر نیب سے غلط لوگوں کو نکالا جائے تو یہ نیب کیلئے بری چیز نہیں ہوگی، نیب نوٹس کے ذریعے لوگوں کو بدنام کرتا ہے۔