ذاتیات پرحملے،ندیم افضل چن نے حکومت اور اپوزیشن کو اہم مشورہ دیدیا

تحریک انصاف کے رہنما ندیم افضل چن نے کہا ہے کہ سیاست کو سیاست تک رکھیں،ذاتیات پر نہ اتریں، یہ مشورہ حکومت اور اپوزیشن دونوں کے لئے ہے۔

جیو نیوز کے پروگرام کیپٹل ٹاک میں گفتگو کرتے ہوئے ندیم افضل چن کا کہنا تھا کہ اس ملک میں بڑے بڑے مولویوں نے عورت کی حکمرانی کے خلاف فتوے دئیے،مذہب کی آڑ لیکر لوگوں کو نہیں اکسانا چاہیے،مولانافضل الرحمان  ذاتیات پر حملے کررہے ہیں۔جہاد کا حکم ریاست کا کام ہے،کسی فرد واحد کو اسکا اختیار نہیں،اس ملک کو استحکام سے دور لے جایا جارہا ہے،عوام میں آگاہی بڑھ رہی ہے۔

ندیم افضل چن کا کہنا تھا کہ جب آپ حکومت کی بجائے کسی اور سے مذاکرات کرنا چاہتے ہیں تو آپ نظریے سے وہیں پھر گئے،پارلیمانی نظام میں پارٹیوں کے اندر جمہوریت آنی چاہیے،نیشنل ایکشن پلان پر مکمل قوت کے ساتھ عمل کرنے کی ضرورت ہے،ملک دشمن عناصر فرقہ وارانہ فساد کی کوشش کررہے ہیں۔جو سسٹم کے بینفشری ہوتے ہیں وہ وکٹ کے دونوں طرف کھیلتے ہیں،سیاسی لوگوں کو سیاسی لوگوں سے مذاکرات کرنے چاہیے،نصرت بھٹو ایم آر ڈی میں بیٹھیں،بے نظیر بھٹو نے نواز شریف کے ساتھ مذاکرات کئیے۔